تازہ ترین

ہمارا چین سے کوئی جھگڑا نہیں، داسو حملہ پاکستان کا منصوبہ تھا: ترجمان ٹی ٹی پی

کالعدم تحریک طالبان کے ترجمان محمد خراسانی نے جمعرات کی رات کو ایک اعلامیہ جاری کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے بارہا اس بات کی وضاحت کی ہے کہ ہمارا ہدف، ہماری جنگ کا میدان صرف اور صرف پاکستان ہی ہے، اقوامِ عالم کے ساتھ ہمارا کوئی مسئلہ نہیں لیکن پاکستان بڑی ’مکاری‘ کے ساتھ ہمارے خلاف ایک اور نیا محاذ کھولنے کی کوشش میں مصروف ہے ۔

محمد خراسانی نے کہا کہ خون بیچنے کا عادی ایک نئے سوداگر کے ساتھ جوڑ توڑ کرنے میں مصروف ہے ـ انہوں نے حکومت پاکستان کو داسو کے واقعے میں ”خود ہی قاتل اور خود ہی مدعی“ قراردیا ـ

مزید کہا کہ ”داسو میں چائنیز انجینئرز پر خود ہی دھماکہ کروایا اور پھر بڑی مکاری کے ساتھ اس کی ذمہ داری تحریک طالبان پاکستان پر ڈالنے کی ناکام کوشش کی اور آج تک اس قبیح کوشش میں مصروف ہے، جس سے یہ چائنہ کو تحریک کے ساتھ دشمنی مول لینے پر مجبور کر رہا ہے ـ ہم چائنیز گورنمنٹ کو واضح الفاظ میں یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ تحریک طالبان پاکستان کو ان کے ساتھ نہ تو کوئی مسئلہ ہے اور نہ ہی ان پر حملے کا کوئی ارادہ“ـ

انہوں نے چین کو متنبہ کیا کہ وہ اپنی اقتصادی جنگ لڑے اور اسی میں کامیابی حاصل کرنے کی کوشش کرے ـ ”ہمارے خلاف پاکستان کو مالی تعاون فراہم کرنے کی غلطی ہرگز نہ کرے“ـ

واضح رہے کہ پچھلے ماہ کی 14 تاریخ کو اپر کوہستان کے داسو کے علاقے میں ایک کاربم دھماکہ کے نتیجے میں نو چینی انجینئرز سمیت تیرہ افراد ہلاک اور کئی زخمی ہوئے تھے، حکومت پاکستان نے اس معاملے میں ٹی ٹی پی کو ملوچ قراردیا تھا تاہم آج ٹی ٹی پی نے اس کی تردید کردی ـ

ایڈمن کے بارے میں admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے